آر پی او ساہیوال محبوب رشید نے ریجن کے تینوں اضلاع میں سنگین وارداتوں کے زیر تفتیش مقدمات کی رپورٹ طلب کر لی۔

آر پی او ساہیوال محبوب رشید نے ریجن کے تینوں اضلاع میں سنگین وارداتوں کے زیر تفتیش مقدمات کی رپورٹ طلب کر لی۔ سنگین مقدمات میں نامزد اشتہاری ملزمان کی گرفتاریوں کے لیے سپیشل ٹیمیں تشکیل دینے کی ہدایات
مظلوم کو انصاف میں تاخیر انصاف سے انکار کے مترادف ہے جسے کسی صورت برداشت نہیں کیا جا سکتا۔آر پی او محبوب رشید

تفصیلات کے مطابق ریجنل پولیس آفیسر ڈی آئی جی محبوب رشید نے ریجن کے تمام ضلعی افسران کو پروفیشنل ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ کسی تفتیشی آفیسر کو اس بات کی ہرگز اجازت نہیں دی جا سکتی کہ وہ کسی دباؤ یا لالچ کے تحت گناہ گار کو بے گناہ اور بے گناہ کو گناہ گار کرے،انہوں نے کہا کہ قانون پسند عوام اور قانون شکنوں کے مابین تفریق کئے بغیر کمیونٹی پولیسنگ کو مستحکم نہیں کیا جا سکتا،زیر تفتیش مقدمات میں ملزمان کی فوری گرفتاری ناگزیر ہے ،اس بات کو مانیٹر کیا جائے گا کہ سنگین مقدمات کے نامزد ملزمان کی گرفتاری میں تاخیر کے کیا اسباب ہیں اگر پولیس کی غفلت،نا اہلی یا لالچ ثابت ہو گیا تو ذمہ دار پولیس افسران کے خلاف پولیس رولز کے تحت سخت محکمانہ احتسابی کارروائی ہو گی
انہوں نے کہا اشتہاری ملزمان اور بڑے گینگز کی گرفتاری کے لیے سپیشل ٹیمیں تشکیل دی جائیں جو ملزمان بیرون ممالک فرار ہیں ان کی لسٹیں اپڈیٹ کریں اور متعلقہ فورم کے ساتھ تعاون سے ان کو انٹرپول کے ذریعے پاکستان لایا جائے
اس سے قبل بھی انسپکٹر جنرل آف پولیس پنچاب ڈاکٹر عثمان انورکے ویژن کے مطابق پنجاب پولیس بیرون ممالک فرار ملزمان کو انٹرپول کے ذریعے گرفتار کر چکی ہے

ترجمان آر پی او آفس

اپنا تبصرہ بھیجیں